Six killed in firing on relationship dispute

رشتے کے تنازع پر فائرنگ، 3 خواتین سمیت 6 افراد جاں بحق

ہالہ میں کچے کے علاقے میں رشتے کے تنازع پر بروہی قبیلے کے افراد نے رند برادری کے ایک مکان میں گھس کر سوئے ہوئے افراد پر فائرنگ کردی جس سے 3 خواتین سمیت 6 افراد جاں بحق ہوگئے۔

ایس ایس پی مٹیاری آصف بگھیو کے مطابق فائرنگ کا واقعہ رشتے کے تنازع پر ہوا، جبکہ جاں بحق ہونے والے افراد کے چچا امیر بخش رند کا کہنا ہے کہ ملزمان نے فائرنگ رات میں سوتے ہوئے اہل خانہ پر کی جس میں 3 خواتین سمیت 6 افراد جاں بحق ہوئے۔

امیر بخش کا کہنا تھا کہ دو سال قبل ان کے بھتیجے مرتضیٰ نے رند برادری کی لڑکی سے محبت کی شادی کی تھی، شادی کے بعد کورٹ نے لڑکی کو پہلے دارالامان میں بھیجا اور پھر شوہر کے ساتھ رہنے کی اجازت دی۔

امیر بخش کا مزید کہنا تھا کہ بروہی برادری کے سردار نے جرگہ کرکے اُن کے خاندان پر 10 لاکھ جرمانہ لگایا جسے ادا کردیا گیا، تاہم جرمانے کی رقم لینے کے باوجود ملزمان نے فائرنگ کرکے 6 افراد کو ہلاک کردیا۔

مزید پڑھیں
انڈیا میں برادری سے باہر اپنی مرضی کی شادی کرنے والے ایک جوڑے کو سنگسار کر دیا گیا ہے۔
انڈیا کی جنوبی ریاست کرناٹکا کے لکلکٹی نامی گاؤں سے تعلق رکھنے والا یہ جوڑا تین سال قبل شادی کے بعد سزا سے بچنے کے لیے فرار ہو گیا تھا۔ تاہم اب جب تین برس بعد دونوں میاں بیوی دوبارہ اپنے گاؤں واپس آئے تو لڑکی کے بھائی نے رشتے داروں کو جمع کیا جنہوں نے دونوں کو دبوچ لیا۔
خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق رمیش اور ان بیوری گنگما کی عمریں شادی کے وقت 29، 29 سال تھیں۔ دونوں ایک دوسرے کو پسند کرنے لگے تاہم دونوں کی ذات ایک نہیں تھی۔ اس لیے دونوں کے خاندان اس رشتے کے لیے راضی نہ ہوئے جس پر دونوں گھر سے بھاگ گئے اور شادی کر لی۔
پہلے وہ کچھ عرصہ بنگلور میں رہے، پھر اس خیال سے کہ رشتہ دار نہ پہنچ جائیں وہ دیگر مختلف شہروں میں بھی رہے۔ تین سال کے دوران ان کے ہاں دو بچے بھی پیدا ہوئے۔

Camera mounted in police uniform

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *