PCB: Rs 346 million increase in 2019 revenue

PCB: Rs 346 million increase in 2019 revenue

دورہ آسٹريليا ميں قومی کرکٹ ٹيم کی ناکامی کا ملبہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے نوجوان کھلاڑيوں پرڈال ديا۔ محمد حفيظ اور شعيب ملک کی واپسی سمیت دیگر اہم امور پر سی ای او نے انٹرنل آڈٹ رپورٹ 30 جنوری کے اجلاس میں پیش کردی۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کی انٹرنل آڈٹ رپورٹ میں سارا حساب کتاب سامنے آگیا۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کو 2019 میں خسارے پر خسارہ ہوتا رہا لیکن ورلڈکپ کی آمدنی نے صورتحال قابو کرلی۔بنگلہ دیش کے ساتھ سیریز کے نشریاتی حقوق کا معاہدہ 6 ملین ڈالر میں ہونا تھا لیکن شیڈول ہفتہ بھر پہلے فائنل ہونے کے باعث 2.25 ملین ڈالر نقصان ہوگیا۔

سری لنکا سیریز سے آمدن کا تخمینہ 787 ملین روپے لگایا گیا تھا لیکن صرف 725 ملین روپے کمائی ہوئی۔قذافی اسٹیڈیم کی دکانوں سے آمدنی میں 90 فیصد کمی تو لوگو اور اسپانسر کے ساتھ معادے میں بھی 15 ملین روپے کا  نقصان ہوا۔اس نقصان کے باوجود پی سی بی کو سالانہ آمدن میں 346 ملین روپے کا اضافہ ہوا۔ اس کی وجہ ورلڈ کپ 2019 کی آمدنی کے مد میں 1015 ملین روپے ملنا ہے۔ سال بھر کی آمدنی 2166 ملین روپے کے تخمینے سے بڑھ کر 2412 ملین روپے تک پہنچ گئی۔

رپورٹ میں قومی ٹیم کے دورہ آسٹریلیا کی ناکامی کا بھی تذکرہ کیا گیا جس میں سارا ملبہ نوجوان کھلاڑیوں کے سر آیا۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ٹیم میں شعیب ملک اور محمد حفیظ کی واپسی کوچ مصباح الحق اورکپتان بابراعظم  کے کہنے پر ہوئی کیوں کہ پاکستان ٹی 20 ٹیم پچھلے 9 میں سے 8 ٹی 20 میچز میں شکست کھا چکی تھی۔محمد حفيظ اور شعيب ملک کی جگہ اور کھلاڑیوں کو بھی آزمایا گیا لیکن وہ ناکام رہے۔رپورٹ میں کہا گیا کہ ٹی 20 ایشیا کپ اور ٹی 20 ورلڈ کپ نزدیک ہیں، ٹیم کی مضبوطی کیلئے ان کھلاڑیوں کی واپسی ناگزیر تھی۔

مزید : کھیل

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *