Pakistan ready to host Bangladesh at home ground after 11 years

Pakistan ready to host Bangladesh at home ground after 11 years

اسلام آباد: پاکستان اور بنگلہ دیش کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان تین ٹی ٹونٹی میچوں کی سیریز کا پہلا میچ  لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا جہاں پاکستانی ٹیم کو سیریز میں عالمی نمبر ایک پوزیشن بچانے کا چیلنج درپیش ہے۔

ٹی20 کرکٹ میں گزشتہ سال مسلسل ناکامیوں کے سبب پاکستانی ٹیم کو اب عالمی نمبر ایک پوزیشن بچانے کے لالے پڑ گئے ہیں اور سیریز میں کلین سوئپ نہ کرنے کی صورت میں قومی ٹیم پہلی پوزیشن گنوا بیٹھے گی۔

 : مزید پڑھیں

Pak Bangladesh T20 Series, Ticket Price Reduction

سیریز میں 1-2 سے فتح کی صورت میں بھی آسٹریلیا کی ٹیم عالمی نمبر ایک بن جائے گی لہٰذا پاکستان کو ہر حال میں سیریز میں کلین سوئپ کرنا ہو گا۔

قومی ٹیم کے کپتان بھی بنگلہ دیش کے خلاف سیریز کی اہمیت سے واقف ہیں اور انہوں نے کہا ہے کہ پاکستانی ٹیم عالمی نمبر ایک پوزیشن بچانے کے لیے سر دھڑ کی بازی لگا دے گی۔

اپریل 2008 میں آسٹریلیا کے انکار پر بی سی بی نے اپنی ٹیم بھجوانے کا فیصلہ کیا۔ مہمان سائیڈ کی بیٹنگ مکمل طور پر فلاپ رہی اور 5ون ڈے میچز کی سیریز میں کلین سوئپ کی خفت اٹھانا پڑی۔

واحد ٹی ٹوئنٹی میں بھی شکست ہوئی، مہمان بیٹسمینوں میں شکیب الحسن 192رنز کے ساتھ نمایاں رہے لیکن ان کا ٹوٹل پاکستانی ٹاپ اسکورر سلمان بٹ سے259رنز کم تھا، بولرز میں شاہد آفریدی 12وکٹوں کے ساتھ سرفہرست تھے، بنگلادیشی پیسر مشرفی بن مرتضیٰ8شکار کرکے دوسرے نمبر پر رہے تھے۔

پاکستان اور بنگلادیش کے مابین جمعے کو ہونے والے میچ کیلیے قذافی اسٹیڈیم میں سخت حفاظتی انتظامات کیے گئے ہیں، اطراف میں پولیس کی بھاری نفری تعینات،ساتھ رینجرز بھی موجود ہیں،نشتر پارک کے علاقے میں عام شہریوں کی آمدورفت معطل کردی گئی،گذشتہ روز دونوں ٹیمیں پریکٹس کیلیے آئیں تو روٹ اور اسٹیڈیم کے اطراف میں ایک ایک حرکت پر نظر رکھی گئی۔

ہیلی کاپٹر بھی نشتر پارک کے اوپر بار بار پرواز کرتا رہا، ٹیموں کی واپسی پر بھی سخت سیکیورٹی دیکھی گئی،بعد ازاں اطراف سے آنے والی سڑکیں عام ٹریفک کیلیے کھول دی گئیں،جمعے کو پولیس کے 10 ہزار سے زائد افسران و جوان سیکیورٹی کی ذمہ داری سنبھالیں گے، تین مقامات پر رینجرز کے جوان بھی موجود رہیں گے۔

پاک فوج کی ایک کمپنی بھی آن بورڈ ہوگی، ریسکیو 1122 کے 600 اہلکار و24 ایمبولینسز ڈیوٹی پر ہوں گی، نجی ہوٹل اور اسٹیڈیم میں عارضی 10 بیڈ کا اسپتال قائم کر دیا گیا ہے، ایف سی کالج، لبرٹی، ایل ڈی اے پارکنگ پلازا اور پنجاب یونیورسٹی ہاسٹلز گراؤنڈ میں مختص پارکنگ مقامات سے شائقین کو مفت شٹل سروس کے ذریعے متعلقہ گیٹ تک پہنچایا جائے گا، اس مقصد کیلیے 40 کوچز دستیاب ہونگی۔

شائقین کو میٹل ڈیٹیکٹرز سے چیک کرنے کے ساتھ واک تھرو گیٹ سے گزارا جائے گا، ٹکٹوں کے ہمراہ شناختی کارڈ بھی لانا ہوگا، اس کی بائیو میٹرک تصدیق کی جائے گی، کوور کیے جانے والے علاقوں میں گیس سے چلنے والی گاڑیاں یا سلنڈرز لانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *