Malala Yousafzai an irregular student

Malala Yousafzai an irregular student
Malala Yousafzai an irregular student

کم عمر ترین نوبل انعام یافتہ پاکستانی لڑکی ملالہ یوسف زئی دنیا بھر میں اپنے سماجی کاموں کی وجہ سے شہرت رکھنے کے ساتھ ساتھ کئی اعزازات اور ایوارڈ اپنے نام کر چکی ہیں۔

لیکن دوسری جانب وہ دیگر سستی کی حامل طالبات کی طرح ہی اپنی زندگی بسر کر رہی ہیں۔ایک غیر ملکی ٹیبلائیڈ کی رپورٹ کے مطابق وہ ایک غیر منظم لڑکی ہیں۔
لِلی سنگھ سے بات چیت کرتے ہوئے ملالہ نے کہا کہ جب ان کے والدین آکسفورڈ میں ان سے ملنے کے لیے آتے ہیں تو وہ ان کے کمرے کی حالت دیکھ کر اپنے بال نوچنے لگ جاتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ’میرے والدین مجھ سے ملنے آتے ہیں تو کہتے ہیں کہ ’کیا تم اپنا کمرے کو صاف ستھرا نہیں کر سکتیں؟ کیا تم اپنے بستر کی چادر تبدیل نہیں کر سکتیں؟ یہ سب کیا ہے؟‘

ملالہ نے یہ بھی بتایا کہ ان کے کمرے کی حالت کو دیکھ کر اکثر کپڑوں اور جوتوں سے متعلق بھی سوالات شروع ہوجاتے ہیں۔

پاکستانی طالبہ نے کہا کہ ان کے والدین کہتے ہیں کہ ’کیا تم اپنے کپڑے اپنی الماری میں نہیں رکھ سکتی ہو؟ تمھارے جوتے زمین پر ایسے کیوں پڑے ہیں؟ کیا تم اپنے برتنوں کو نہیں دھو سکتیں؟‘

اکیسویں صدی کی دوسری دہائی کی مقبول ترین نوجوان

اپنی اس عادت کے بارے میں 22 سالہ طالبہ کہتی ہیں کہ وہ اکثر سو کر دیر سے اٹھتی ہیں جس کی وجہ سے ان کی کلاسز بھی چھوٹ جاتی ہیں جبکہ وہ اپنے اسائمنٹس جمع کروانے میں بھی دیری کردیتی ہیں۔
خیال رہے کہ اقوام متحدہ (یو این) کے ایک جائزے کے مطابق کم عمر ترین نوبل انعام یافتہ پاکستانی سماجی کارکن ملالہ یوسف زئی اکیسویں صدی کی دوسری دہائی کی مقبول ترین نوجوان رہیں۔

جائزے میں لڑکیوں کی تعلیم کے سلسلے میں ملالہ کی کوششوں کا اعتراف کیا گیا جبکہ اس جائزے میں ملالہ پر قاتلانہ حملے سے لے کر عالمی اعزازت کے حصول تک کا ذکر کیا گیا۔

اس کے ساتھ ساتھ معروف امریکی فیشن میگزین ’ٹین ووگ‘ نے ملالہ یوسف زئی کو اپنے میگزین کے سر ورق کی زینت بناتے ہوئے انہیں سال 2019 اور 2010 کی دہائی کی بہترین نوجوان قرار دیا تھا۔

 

Tiktok disadvantages

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *