عدالت نے عمران خان کے خلاف توہین مذہب کی درخواست قابلِ سماعت ہونے پر فیصلہ سنا دیا

عدالت نے عمران خان کے خلاف توہین مذہب کی درخواست قابلِ سماعت ہونے پر فیصلہ سنا دیا

عدالت نے عمران خان کے خلاف توہین مذہب کی درخواست قابلِ سماعت ہونے پر فیصلہ سنا دیاجب حقائق واضح ہوں تو کسی اجتماع میں غیر ارداری غلطی کو گستاخی کے طور پر نہیں لیا جا سکتا. عدالت نے درخواست خارج کر

عدالت نے عمران خان کے خلاف توہین مذہب کی درخواست قابلِ سماعت ہونے پر فیصلہ سنا دیا۔تفصیلات کے مطابق جمعرات کو عدالت عالیہ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے وزیراعظم عمران خان کیخلاف درخواست گزار سلیم اللہ ایڈوکیٹ کی جانب سے دائر توہین عدالت کی نظرثانی درخواست پر سماعت کی ۔ وزیراعظم عمران خان کے خلاف توہین مذہب کی درخواست نا قابل سماعت قرار دے کر خارج کر دی گئی ہے۔درخواست گزار سلیم اللہ خان ایڈوکیٹ نے دائر کی تھی جس پر اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے گذشتہ روز محفوظ کیا گیا فیصلہ سنا دیا ہے۔ہائیکورٹ کی جانب سے آج صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کیا گیا ہے۔فیصلے کے مندرجات کے مطابق جب حقائق واضح ہوں تو کسی اجتماع میں غیر ارداری غلطی کو گستاخی کے طور پر نہیں لیا جا سکتا۔

عدالت کے مطابق گستاخ کا الزام اس وقت بھی ٹھیک ہیں جب مکمل واضح ہو کہ متعلقہ شخص ایسا کرنے کا ارادہ نہیں رکھتا۔

ایمان اور یقین ہر شخص کا ذاتی معاملہ ہے دوسروں کو اس پر سوال نہیں اٹھانا چاہئیے۔عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ توہین رسالت کا الزام لگانے کے حوالے سے ہمیشہ انتہائی احتیاط سے کام لینا ضروری ہے،62 ون ای کے حوالے سے اسلامی تعلیمات کو عدالتی کاروائی کے ذریعے نہیں ماپا جا سکتا جب کہ آرٹیکل 199 کے تحت کسی منتخب نمائندے کو اہل یا نااہل کرنے کے حوالے سے بھی انتہائی احتیاط کی ضرورت ہے۔درخواست گزار نے وزیراعظم کے ایمان اور یقین پر سوال اٹھایا ہے۔تسلیم شدہ حقیقت ہے کہ وزیراعظم نے حلف اٹھایا ہے کہ وہ نبی کریم ﷺ کے آخری نبی ہونے پر مکمل یقین رکھتے ہیں۔خیال رہے کہدرخواست گزار سلیم اللہ خان نے کہاکہ وزیراعظم نے 18 نومبر کی تقریر میں توہین عدالت کی ، عمران خان نے اپنی تقریر سے عدلیہ کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی۔درخواست گزار نے کہاکہ توہین عدالت کا الزام اٴْن کی تقریر کے متن سے واضح ہے۔درخواست گزار سلیم اللہ خان نے کہاکہ عمران خان نے اعلیٰ عدلیہ کی تضحیک کی اور مذاق اٴْڑایا ۔ درخواست گزار نے کہاکہ عمران خان کی تقریر کی ریکارڈنگ اور ٹرانسکرپٹ بھی درخواست کے ساتھ جمع کرایا گیا۔ سلیم اللہ خان نے کہاکہ پرویز مشرف کے خلاف فیصلے پر بھی عمران خان نے عدلیہ کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ درخواست گزار نے کہاکہ عمران خان اپنے بیانات سے مسلسل عدلیہ کی تضحیک کر رہے ہیں۔

مزید : قومی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *